(سورۃ ٱلطَّارِق (مکی، آیات 17

بِسۡمِ اللّٰہِ الرَّحۡمٰنِ الرَّحِیۡمِ


بنام خدائے رحمن رحیم


1وَ السَّمَآءِ وَ الطَّارِقِ ۙ 515

1۔قسم ہے آسمان کی اور رات کو چمکنے والے کی۔



1وَ مَاۤ اَدۡرٰىکَ مَا الطَّارِقُ ۙ 525

2۔ اور آپ کو کس چیز نے بتایا رات کو چمکنے والا کیا ہے؟



1النَّجۡمُ الثَّاقِبُ ۙ 535

3۔ وہ روشن ستارہ ہے۔



1اِنۡ کُلُّ نَفۡسٍ لَّمَّا عَلَیۡہَا حَافِظٌ ؕ 545

4۔ کوئی نفس ایسا نہیں جس پر نگہبان نہ ہو۔



1فَلۡیَنۡظُرِ الۡاِنۡسَانُ مِمَّ خُلِقَ ؕ 555

5۔ پس انسان کو دیکھنا چاہیے کہ وہ کس چیز سے پیدا کیا گیا ہے۔



1خُلِقَ مِنۡ مَّآءٍ دَافِقٍ ۙ 565

6۔ وہ اچھلنے والے پانی سے خلق کیا گیا ہے،



1یَّخۡرُجُ مِنۡۢ بَیۡنِ الصُّلۡبِ وَ التَّرَآئِبِ ؕ 575

7۔ جو پیٹھ اور سینے کی ہڈیوں سے نکلتا ہے۔



1اِنَّہٗ عَلٰی رَجۡعِہٖ لَقَادِرٌ ؕ 585

8۔ بے شک اللہ اسے دوبارہ پیدا کرنے پر بھی قادر ہے۔



1یَوۡمَ تُبۡلَی السَّرَآئِرُ ۙ 595

9۔ اس روز تمام راز فاش ہو جائیں گے۔



1فَمَا لَہٗ مِنۡ قُوَّۃٍ وَّ لَا نَاصِرٍ ؕ 5105

10۔ لہٰذا انسان کے پاس نہ کوئی قوت ہو گی اور نہ کوئی مددگار ہو گا۔