(سورۃ ٱلْقِيَامَة (مکی، آیات 40

بِسۡمِ اللّٰہِ الرَّحۡمٰنِ الرَّحِیۡمِ


بنام خدائے رحمن رحیم


1لَاۤ اُقۡسِمُ بِیَوۡمِ الۡقِیٰمَۃِ ۙ 515

1۔ قسم کھاتا ہوں روز قیامت کی۔



1وَ لَاۤ اُقۡسِمُ بِالنَّفۡسِ اللَّوَّامَۃِ ؕ 525

2۔ قسم کھاتا ہوں ملامت کرنے والے نفس (زندہ ضمیر) کی،



1اَیَحۡسَبُ الۡاِنۡسَانُ اَلَّنۡ نَّجۡمَعَ عِظَامَہٗ ؕ 535

3۔ کیا انسان یہ خیال کرتا ہے کہ ہم اس کی ہڈیوں کو جمع نہیں کریں گے؟



1بَلٰی قٰدِرِیۡنَ عَلٰۤی اَنۡ نُّسَوِّیَ بَنَانَہٗ 545

4۔ ہاں! (ضرور کریں گے) ہم تو اس کی انگلیوں کی پور بنانے پر بھی قادر ہیں۔



1بَلۡ یُرِیۡدُ الۡاِنۡسَانُ لِیَفۡجُرَ اَمَامَہٗ ۚ 555

5۔ بلکہ انسان چاہتا ہے کہ مستقبل میں (عمر بھر) برائی کرتا جائے۔



1یَسۡـَٔلُ اَیَّانَ یَوۡمُ الۡقِیٰمَۃِ ؕ 565

6۔ وہ پوچھتا ہے: قیامت کا دن کب آئے گا۔



1فَاِذَا بَرِقَ الۡبَصَرُ ۙ 575

7۔ پس جب آنکھیں پتھرا جائیں گی،



1وَ خَسَفَ الۡقَمَرُ ۙ 585

8۔اور چاند بے نور ہو جائے گا،



1وَ جُمِعَ الشَّمۡسُ وَ الۡقَمَرُ ۙ 595

9۔ اور سورج اور چاند ملا دئیے جائیں گے،



1یَقُوۡلُ الۡاِنۡسَانُ یَوۡمَئِذٍ اَیۡنَ الۡمَفَرُّ ۚ 5105

10۔ تو انسان اس دن کہے گا: بھاگ کر کہاں جاؤں؟